اپنی مرضی کی زندگی گزارنا چاہتے ہیں ؟

Aamer Habib Pakistani Journalist

Aamer Habib Pakistani Journalist

کیا کوئی ایسی چیز ہے جو بہترین ا ور گمنام میں فرق پیدا کرتی ہے؟جی ہاں، اسکا نام ہے خود اعتمادی! اگر آپ خود پر اعتماد نہیں رکھتے تو یہ جانے بنا ہی دنیا سے چلے جائیں گے کہ آپ میں کیا کیا کرنے کی صلاحیت اور قابلیت تھی۔خود اعتمادی ایک ایسی نعمت ہے جو آپ بلا قیمت پاتے ہیں اور یہ آپکو آپکے ہدف یا منزل تک لے جا سکتی ہے،اُس وقت جب باقی سب آپکو شک کی نگاہ سے دیکھتے ہوں۔ اس سے کوئی فرق نہیں پڑتا کہ لوگ آپکے متعلق کیا سوچتے ہیں۔ خود اعتمادی وہ کر سکتی ہے جو کوئی ہنر بھی نہ کر پائے۔یہ اُس وقت آپکے کام آتی ہے جب کوئی سہارا میسر نہیں ہوتا۔مگر حقیقت یہ ہے کہ جب آپکے اندر خود اعتمادی موجود ہو تو کسی سہارے کی ضرورت رہتی ہی نہیں۔ہر روز خود کو یہ باور کرائیں کہ: ’’میں جانتا ہوں کہ میں اپنی منزل پا لوں گا اور اپنا ہدف حاصل کر لوں گاکیونکہ مجھے خود پر اعتماد ہے، اور میں یہ سب ممکن بنا سکتا ہوں!میرے دماغ اور میری سوچ میں اس لحاظ سے کوئی شک وشبہ نہیں،نہ ہی مجھے کسی کی سوچ سے کوئی فرق پڑتا ہے۔ میں اپنی منزل سے بھی واقف ہوں اور اپنے آپ سے بھی۔تو پھر مجھے کتنی ہی بارہار،شک اورمسترد پن کا سامنا کیوں نہ کرنا پڑے__ مجھے پرواہ نہیں کیونکہ مجھے خود پر اعتماد ہے! راستہ چاہے کتنا ہی گہرا اور دشوار گزار کیوں نہ ہو،مین لڑوں گا اور آگے بڑھوں گا۔ میں حالات کو اپنے موافق بناوٗں گا اور جیتوں گا۔ میرا دماغ اور ارادہ مضبوط ہے،سو اس زمین پر کوئی ایسی چیز نہیں جو مجھے میری راہ سے بھٹکا سکے۔بیشک لوگ میری قابلیت پر شک کر کے اسے ناممکن کہہ دیں، میں کر دکھاوءں گا۔وہ انکی سوچ کی حد ہے اور میری سوچ کی حد میں بہتر جانتا ہوں۔زندگی مجھے گھٹنوں کے بل گرا سکتی ہے مگر یہ عمل بھی مجھے مزئد مضبوط ہی بنائے گا۔بیشک میرا دل دوسروں سے زیادہ مضبوط ہیاور میری قوتِ ارادی ان سے کئی گنا زیادہ۔میں وہ سب حاصل کروں گا جو میں پانا چاہتا ہوں۔

یہ میرا خود سے وعدہ ہے۔تو سن لیا تم نے؟ مجھے کوئی نہیں توڑ سکتا! اگر آپ یہ تہیہ کر لیں تو پھر کون ہے جو آپکی کامیابی کی راہ میں رکاوٹ حائل کر سکے؟ کون ہے جو آپکو آپکے اہداف و مقاصد سے ہٹا سکے؟کیا خدا کے بعد انسان کیلئے خود سے بڑا بھی کوئی سہارا ہو سکتا ہے؟اگر آپ اپنی خود اعتمادی کے بل بوتے پر اپنی منزل پا لیں تو کیا یہی لوگ جو آج آپکی قابلیت کو شک کی نگاہ سے دیکھتے ہیں،آپکی پیروی کرنے پر مجبور نہ ہو جائیں گے؟فیصلہ__ آپکا!

Aamer Habib Pakistani Journalist

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *